مسجد النمرہ

مسجد النمرہ

The Masjid al Nimrah

 

مسجد نمرة (عربی: مسجد نمرة) وادی یورانہ میں واقع ہے۔

جب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم 9 ذی الحجہ 10 ہجری کو

الوداعی حج کے موقع پر عرفات میں تھے تو آپ نے یہیں پڑاؤ ڈالا۔

دوپہر کے بعد اس نے اپنا مشہور خطبہ (ذیل میں دوبارہ پیش کیا گیا)

اپنے اونٹ پر بیٹھتے ہوئے وادی یوران میں دیا جس کے بعد اس نے نماز پڑھی۔

اس حج میں آپ کے ساتھ ایک لاکھ سے زیادہ صحابہ کرام نے شرکت کی۔

 

 

رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) لوگوں سے خطاب سے فارغ ہونے کے

کچھ ہی دیر بعد اللہ کی طرف سے آپ پر وحی نازل ہوئی کہ آج میں نے آپ

کے لیے آپ کا دین مکمل کر دیا ہے اور آپ پر اپنی نعمت پوری کر دی ہے

اور میں نے اسلام کو آپ کا دین پسند کر لیا ہے۔ [5:3]

اسلام کی دوسری صدی میں مسجد نمرہ اس جگہ بنائی گئی تھی

جہاں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے خطبہ دیا اور نماز پڑھائی۔

کیونکہ وادی اورانہ جہاں خطبہ دیا گیا تھا وہ عرفات کی حدود سے باہر ہے

اور مسجد کا وہ حصہ بھی فطری طور پر حدود سے باہر ہے۔

بعد میں جب مسجد کو بڑھایا گیا تو یہ دو حصوں میں بٹ گئی ایک اگلا حصہ جو

اصل مسجد کا مقام عرفات سے باہر تھا اور پیچھے والا حصہ حدود میں تھا۔

تزئین و آرائش کے بعد مسجد کے اندر سائن بورڈ لگائے گئے تھے تاکہ

لوگوں کو اس معاملے سے آگاہ کیا جا سکے تاکہ ظہر اور عصر کی نماز باجماعت

ادا کرنے کے بعد وہ عرفات میں اپنا باقی وقت گزارنے کے لیے عقب میں جا سکیں یا باہر جا سکیں۔

 

You Might Also like: The Masjid Mashar al-Haram

Leave a Reply

Your email address will not be published.