زہر بن حرام رضی اللہ عنہ کا واقعہ

زہر بن حرام رضی اللہ عنہ کا واقعہ

Zaher Bin Haram (r.a) Story

Zaher Bin Haram (r.a) Story

 

حضرت انس رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں  ایک دیہاتی زہر بن حرام رضی اللہ عنہ

اپنے گاؤں سے مال لے کر آتا تھا تاکہ اسے مدینہ میں بیچے۔ وہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے

لیے کچھ دیہاتی تحفے بھی لایا کرتے تھے۔ اس کے بدلے میں نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے

انہیں مدینہ میں بنائے گئے کچھ تحفے بھی دیے۔

وہ ایک متقی انسان، عرب لیکن افریقی جیسی شخصیت تھے۔ حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم

ان کے لیے احترام اور محبت رکھتے تھے اور کہا کرتے تھے کہ “وہ میرا دیہاتی دوست ہے

اور میں اس کا شہری دوست ہوں”۔ایک مرتبہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم

نے انہیں بازار میں اپنا سامان بیچتے ہوئے دیکھا۔ وہ خاموشی سے پیچھے سے آیا

تاکہ زہر بن حرام اسے نہ دیکھ سکے اور اسے حیران کرنے کے لیے اچانک پیچھے سے اسے گلے لگا لیا۔

زہر نے کہا کون ہے مجھے آزاد کرو۔ لیکن جب اسے معلوم ہوا

کہ وہ حضرت محمد (صلی اللہ علیہ وسلم) ہیں تو اس نے مزید وقت تک اسی طرح رہنے کی کوشش کی۔

 

صحابہ سے مذاق

 

نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنے صحابہ سے مذاق میں پوچھا کہ اس غلام کو کون خریدے گا؟

ہنستے ہوئے اور ابھی بھی نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی گرفت میں تھے، ظہر نے کہا

یا رسول اللہ! آپ خسارے میں ہوں گے

(کیونکہ میری ناقص شخصیت کی وجہ سے کوئی آپ کو اچھی قیمت نہیں دے گا)

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: “(نہیں ظاہر)، چاہے لوگ تمہیں عزت کیوں نہ دیں

لیکن اللہ کے لیے تم انمول اور انمول ہو۔

You May Also Like: The Story Of Prophet Muhammad Visit to Taif

Leave a Reply

Your email address will not be published.