مدینہ منورہ میں بس حادثے میں آٹھ عمرہ زائرین جاں بحق

مدینہ منورہ میں بس حادثے میں آٹھ عمرہ زائرین جاں بحق

Umrah in eight Pilgrims Passes Away in

Madinah After Deadly Bus Crash

 

22 اپریل بروز جمعہ مدینہ پہنچنے سے پہلے 51 زائرین کو لے جانے والی بس جدہ

مدینہ روڈ پر 100 کلومیٹر کے فاصلے پر ایک ہی حادثہ میں الٹ گئی پولیس کے مطابق بس حادثے کے نتیجے میں

متعدد افراد زخمی اور آٹھ افراد جاں بحق ہوئے۔

المدینہ المنورہ کے علاقے میں ہلال احمر اتھارٹی برانچ کے ڈائریکٹر جنرل احمد الزہرانی نے وضاحت کی کہ

علاقے میں ہلال احمر کے آپریشنز روم (997) کو جمعہ کی صبح 06.14 بجے ایک بس کے الٹنے کے حوالے

پپر امیگریشن ہائی وے پورٹ موصول ہونے کے بعد KM 140سے رپورٹ موصول ہوئی 

(Twaiq)کی جدید ترین گاڑیوں کو فوری طور پر ملٹیپل انجری بس     RTA

کی طرف بھیج دیا گیا اور پہلی ٹیم 06.24 پر پہنچی۔

معلوم ہوا ہے کہ علاقے کے اندر سے 20 ایمبولینسیں اور مکہ المکرمہ کے علاقے سے 6 ٹیمیں متاثرین کو نکالنے میں

مدد کے لیے  روانہ کی گئیں جن کی قیادت فیلڈ کمانڈ، صحت کے

امور کے ڈائریکٹر، ایمرجنسی اسسٹنٹ اور ڈائریکٹر آف کمانڈ اینڈ کنٹرول کے فالو اپ نے بھی انخلاء کے عمل میں کی۔

سعودی اخبار الریاض نے اطلاع دی ہے کہ جمعہ کی صبح نقل مکانی کی ایک شاہراہ پر بس کے

حادثے میں 8 افراد ہلاک اور 43 زخمی ہو گئے۔ معلوم ہوا ہے کہ کل 51 مسافروں میں سے 3 شدید زخمی

 معمولی زخمی، 30 کی حالت مستحکم اور 8 کی موت واقع ہوئی

روڈ سیفٹی ڈپارٹمنٹ نے کہا کہ متاثرین کو صحت کے دیگر آپریشنز کے ساتھ مل کر قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

یہ خبر لکھے جانے تک سعودی حکام کی جانب سے حادثے کی وجہ یا بس میں سوار افراد کا تعلق کس ملک سے تھا

اس حوالے سے کوئی سرکاری بیان سامنے نہیں آیا ہے۔

 اسی طرح کا ایک حادثہ 2019 میں پیش آیا تھا جہاں اسی شاہراہ پر الاخل گاؤں کے قریب پینتیس

زائرین کی بس ایک لوڈر سے ٹکرانے کے بعد ہلاک ہو گئی تھی شکار ہونے والے مسافروں کے بارے میں

جانا جاتا ہے کہ وہ ایشیائی اور عرب قومیتوں کے تارکین وطن تھے جو مبینہ طور پر حج کے لیے مدینہ سے

مکہ جا رہے تھے۔

You May Also Like:Pakistan,Indonesia, India And BangladeshGets The Largest Hajj 2022 Quota

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.