حج اور عمرے کے دوران طواف کی اقسام

حج اور عمرے کے دوران طواف کی اقسام

Types Of Tawaf During Hajj and Umrah

 

Types Of Tawaf During Hajj and Umrah

جیسا کہ ہم جانتے ہیں، طواف حج کے اہم عبادات میں سے ایک ہے۔

لفظ ‘طواف’ خود عربی فعل “طافہ” سے نکلا ہے، جس کا مطلب ہے “کسی چیز کو گھیرنا” یا “کسی چیز کے گرد گھومنا”۔

اسلام میں طواف کا مطلب ہے گھڑی کی مخالف حرکت میں کعبہ کے  گرد سات بار چکر لگانا یا

اس کا طواف کرنا، ہر ایک چکر حجر اسود (کعبہ کے مشرقی کونے میں واقع سیاہ پتھر) پر شروع اور ختم ہوتا ہے۔

لیکن بدقسمتی سے بہت سے مسلمان یہ نہیں جانتے کہ اسلام میں

 

 طواف کی پانچ اقسام ہیں  

جن میں سے ہر ایک کومختلف طریقے سے انجام دینا ہے۔

اسلام میں طواف کی پانچ اقسام کے بارے میں

مزید جاننے کے لیے آئیے ذیل میں طواف کی اقسام کی وضاحت پڑھیں۔

 

 طواف العمرہ  

Five Types Of Tawaf During Hajj and Umrah

اس قسم کا طواف وہ عازمین کرتے ہیں جو حج کے موسم سے باہر عمرہ کرنا چاہتے ہیں

یا وہ لوگ جو حج تمتع کرنا چاہتے ہیں۔

حج تمتع عام طور پر وہ لوگ کرتے ہیں جو سعودی عرب سے باہر رہتے ہیں

اور عمرہ اور حج دونوں ایک ساتھ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

عام طور پر، وہ پہلے عمرہ کریں گے، جہاں طواف العمرہ کیا جاتا ہے

 اور پھر حج کے لیے روانہ ہوتے ہیں۔

اس قسم کا طواف فرض ہے اور اس طواف کے بغیر عمرہ باطل ہے۔

اس قسم کا طواف احرام باندھ کر کیا جاتا ہے۔

 

 طواف القدم 

 

طواف قدوم کو آمد کا طواف بھی کہا جاتا ہے

کیونکہ یہ حج شروع کرنے سے پہلے مکہ مکرمہ پہنچنے پر کیا جاتا ہے۔

اس قسم کا طواف کم از کم 9 ذوالحجہ کو وقوف سے پہلے

حج القران اور حج الفراد کرنے کے لیے میقات کی حدود سے

باہر جانے والے مسلمانوں پر واجب ہے۔ اس قسم کا طواف کرتے وقت حجاج پر احرام باندھنا ضروری ہے

اور اعتکاف اور رمل کرنا سنت ہے۔

 

 طواف الافاضہ اور طواف الزیارہ 

 

طواف الافضاء یا طواف الزیارہ وہ طواف ہے جسے تمام حاجی قربانی

حلق (سر منڈوانے یا بال کٹوانے) سے فارغ ہونے کے بعد

اور حالت احرام سے نکل کر باقاعدہ لباس میں تبدیل ہوتے ہیں۔

یہ طواف 10 ذوالحجہ کو منیٰ واپسی سے پہلے رمی الجمارات کو انجام دینے کے لیے کیا جاتا ہے۔

اور طواف افاضہ میں رمل کرنا بھی سنت ہے۔

 

 طواف الوداع 

 

طواف الوداع یا الوداعی طواف حج کا ایک عمل ہے

جو میقات کی حدود سے باہر سے آنے والے حاجیوں کو کرنا چاہیے۔

ساتھ ہی میقات کی حدود میں رہنے والوں پر یہ طواف واجب نہیں ہے۔

یہ طواف آخری رسم ہے جو مکہ مکرمہ میں اگلی منزل پر جانے سے پہلے ادا کی جاتی ہے۔

اس طواف کو کرنے کے لیے احرام باندھنے کی ضرورت نہیں کیونکہ یہ طواف عام کپڑوں میں کیا جا سکتا ہے۔

 

 طواف نفل 

 

نفل طواف نفل کا ایک عمل ہے جو رضاکارانہ طواف ہے

جو کسی بھی وقت اور جتنا چاہے کرسکتا ہے۔

عموماً لوگ مسجد الحرام میں جب چاہیں نفل طواف کرتے ہیں۔

جب آپ کسی بھی وجہ سے مکہ مکرمہ میں ہوں

تو آپ نفل طواف کر کے اپنے فارغ وقت کا زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.