ہابیل کی قبر

ہابیل کی قبر

The tomb of Habil

The tomb of Habil

 

یہ مبینہ طور پر حضرت آدم علیہ السلام کے بیٹے ہابیل کی قبر ہے اور دنیا میں

سب سے پہلے قتل ہونے والے شخص کی قبر ہے۔ یہ دمشق کے مضافات میں واقع ہے۔

حضرت آدم (علیہ السلام) اور حوا (ع) کو دو بیٹے ہابیل  اور قابیل سے نوازا گیا۔

جب وہ بڑے ہوئے تو چھوٹا بھائی ہابیل چرواہا بن گیا۔

اس نے بھیڑ بکریاں اور دوسرے جانور چرائے۔ بڑا بھائی قابیل کھیتوں میں کاشت کاری کا کام کرتا تھا۔

ایک دن دونوں نے اپنے رب کو راضی کرنے کے لیے قربانی کرنے کا فیصلہ کیا۔

ہابیل نے اپنے ریوڑ کا بہترین حصہ لیا جبکہ قابیل اپنی فصلیں لے آیا۔

اچانک روشنی کی ایک چنگاری نازل ہوئی اور ہابیل کے نذرانے کو جلا کر راکھ کر دیا۔

اس طرح اللہ تعالیٰ نے ہابیل کی قربانی قبول فرمائی لیکن قابیل کی قربانی کو رد کردیا۔

قابیل کو بے عزتی اور توہین پر دکھ ہوا۔

اس کا چہرہ غصے سے سیاہ ہو گیا اور اس کا دل سخت ہو گیا: “نہیں” قابیل

نے پکارا “میں تمہیں مار ڈالوں گا” اپنے بڑے بھائی ہابیل کی اس دعوت پر وہ پیچھے نہیں ہٹا۔

اس نے آرام سے کہا اگر تم مجھے مارنے کے لیے ہاتھ اٹھاؤ تو بھی میں پیچھے نہیں ہٹوں گا

کیونکہ میں اللہ رب العالمین سے ڈرتا ہوں۔

قابیل نے اپنے بھائی ہابیل کو قتل کیا

لیکن قابیل کا غصہ اس پر بھڑک اٹھا اور اس نے اپنے بے گناہ بھائی ہابیل کو قتل کر دیا۔

لیکن جلد ہی قابیل کا غصہ ٹھنڈا ہو گیا اور اسے بہت افسوس ہوا

اب میں نے اپنے بھائی کو قتل کر دیا ہے قابیل نے گہرے دکھ میں اپنے آپ سے کہا۔

پھر اللہ نے ایک کوے کو بھیجا جو لاش کے قریب زمین پر آ گیا۔

کوے نے قابیل سے کہنے کے لیے زمین کھرچنا شروع کر دی کہ وہ اپنے بھائی کی لاش کو زمین کے نیچے دفن کر دے۔

“افسوس ہے میں” قابیل نے بے بسی سے پکارا۔

میں اس کوے سے بھی بدتر ہوں کیونکہ میں اپنے بھائی کی لاش کو چھپا نہیں سکتا۔

قابیل کو اس کی گھٹیا پن اس لیے زیادہ محسوس ہوئی کہ ایک کوا بھی اسے سبق سکھا سکتا ہے۔

دو بھائیوں کا قصہ بیان کرتے ہوئے قرآن ہمیں سورۃ المائدہ میں یاد دلاتا ہے۔

ہم نے بنی اسرائیل پر حکم دیا کہ جو شخص کسی کو قتل کرتا ہے سوائے

اس کے کہ قتل کے بدلے میں ہو یا زمین میں فساد پھیلا رہا ہو تو گویا

اس نے تمام انسانوں کو قتل کر دیا اور جس نے کسی کی جان بچائی وہ ایسا ہے۔

اگر وہ تمام بنی نوع انسان کی جان بچاتا ہے۔[قرآن 5:32]

Leave a Reply

Your email address will not be published.