مسجد نبوی

مسجد نبوی

The Masjid-e-Nabwi

 

مسجد نبوی (عربی: المسجد النبوي) وہ مسجد ہے جسے

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے مدینہ منورہ کی طرف ہجرت کے وقت قائم کیا تھا۔

یہ اسلام کی دوسری سب سے زیادہ قابل احترام مسجد ہے۔

اور یہ مکہ مکرمہ میں مسجد الحرام کے بعد دنیا کی دوسری بڑی مسجد ہے۔

جب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے مدینہ منورہ کی طرف

ہجرت کی (اس وقت اسے یثرب کہا جاتا تھا

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے مدینہ کے مسلمانوں کو ’’انصار‘‘ کا لقب دیا

جس کا مطلب ہے مددگار  جب کہ قریش اور دیگر قبائل کے مسلمان

جو اپنا گھر بار چھوڑ کر نخلستان کی طرف ہجرت کر گئے تھے

آپ نے ’’مہاجرون‘‘ یعنی مہاجرین کا لقب دیا۔

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے دور حیات میں دو مرتبہ مسجد تعمیر ہوئی۔

پہلی بار 622 عیسوی میں مدینہ منورہ کے لیے ہجرت کرنے کے فوراً بعد

مسجد کا سائز تقریباً 35،30 میٹر اور اونچائی 2.5 میٹر تھی۔

اسے فتح خیبر کے سات سال بعد دوبارہ تعمیر کیا گیا۔

جب 624 عیسوی میں قبلہ کو مکہ مکرمہ میں تبدیل کرنے کے لیے وحی نازل ہوئی

تو پوری مسجد کو دوبارہ جنوب کی طرف کر دیا گیا۔

:رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا

جس نے میری مسجد میں چالیس نمازیں پڑھیں مسجد میں ایک نماز بھی نہ چھوڑی

اسے جہنم کی آگ اور عذاب سے چھوٹ دی گئی، منافقت سے پاک رہو۔

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:میری مسجد میں پڑھی جانے والی

ایک نماز مسجد الحرام کے علاوہ دوسری مساجد میں

پڑھی جانے والی ہزار نمازوں سے افضل ہے۔

You Might Also Like:The Maqam of Prophet Ebrahim (A.S)

You Might Also Like:Inside in the Kabah

Leave a Reply

Your email address will not be published.