مسجد اقصیٰ (بیت المقدس)

مسجد اقصیٰ (بیت المقدس)

The Masjid al-Aqsa (Bayt al-Maqdis)

 

مسجد اقصیٰ نہ صرف قبلی مسجد (چاندی/سیاہ گنبد والی) یا چٹان کا گنبد ہے۔

یہ درحقیقت وہ پورا خطہ ہے جس پر اوپر روشنی ڈالی گئی ہے اور اسے بیت المقدس

یا  (مقدس خانہ) کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔

مسجد الاقصیٰ کے نام کا ترجمہ سب سے دور کی مسجد ہے اور یہ اسلام کا تیسرا مقدس ترین مقام ہے۔

یہ وہ مقام تھا جب تقریباً 621 عیسوی میں نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم

مکہ سے رات کے سفر پر براق پر سوار ہوئے۔

مسجد اقصیٰ کوئی عام مسجد نہیں ہے۔

رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے اپنی زندگی کا ایک بڑا حصہ صحابہ کرام (رض)

کی پرورش میں مسجد اقصیٰ کی بہترین خصوصیات کی تعریف کرنے کے لیے وقف کردیا۔

 مسجد اقصیٰ کو مومن کی لگن کا ایک اہم پہلو بننے کی چند وجوہات یہ ہیں کہ 

 

مسلمانوں کا قبلہ اول                 الاسراء اور المعراج کا اسٹیشن

زمین پر اللہ کا دوسرا گھر بنایا          وہ جگہ جہاں سینکڑوں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم مدفون ہیں۔

وہ جگہ جہاں بہت سے صحابہ مدفون ہیں۔

وہ جگہ جہاں اللہ کی مرضی سے معجزے دکھائے جاتے تھے۔

ایک ایسی جگہ جسے اللہ (ﷻ) نے خود ’’مبارک مقام‘‘ کہا ہے۔

قرآن مجید میں بالواسطہ اور بالواسطہ 70 مرتبہ اس کا حوالہ دیا گیا ہے۔

وہ جگہ جہاں فرشتے اللہ کا پیغام لے کر اترے۔

روئے زمین پر وہ واحد جگہ ہے جہاں تمام رسولوں نے ایک ہی وقت میں

حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی امامت میں نماز ادا کی تھی۔

کعبہ کے علاوہ واحد مسجد جس کا نام قرآن میں مذکور ہے۔

زیادہ تر مذہبی یہودی الاقصیٰ کے احاطے (جسے وہ ٹمپل ماؤنٹ کہتے ہیں)

میں داخلے کو یہودی قانون کی خلاف ورزی سمجھتے ہیں۔

یہ پابندی اس عقیدے پر مبنی ہے کہ اگرچہ ہیکل سلیمانی کو صدیوں پہلے تباہ کر دیا گیا تھا

اس مقدس مقام کا صحیح مقام معلوم نہیں ہے جس میں کبھی اعلیٰ پادری داخل ہوا تھا۔

ان کا ماننا ہے کہ ہیکل کو صرف ان کے مسیحا کے آنے کے بعد بنایا جانا چاہیے

اور یہ ان کا عقیدہ ہے کہ لوگوں کے لیے خدا کے ہاتھ پر زبردستی کرنا گستاخانہ ہوگا۔

کئی یہودی گروہ ہیں جو اس رائے سے مختلف ہیں۔

 

 مسجد اقصیٰ کا انفوگرافک 

 

مسجد اقصیٰ کے اندر اور باہر جانے والے دس کھلے دروازے ہیں۔

ان میں سے نو مسلمان استعمال کر سکتے ہیں، مستثنیٰ مراکشی گیٹ (باب المغریب) ہے

جس سے داخل ہونے کے لیے صرف غیر مسلم ہیں۔

مسجد اقصیٰ کے احاطے میں 25 کنویں ہیں۔

You Might Also Like:The Masjid-e-Nabwi

You Might Also Like:The Maqam of Prophet Ebrahim (A.S)

Leave a Reply

Your email address will not be published.