مقام حضرت ابراہیم علیہ السلام

مقام حضرت ابراہیم علیہ السلام

The Maqam of Prophet Ebrahim (A.S)

یہ ہیبرون میں مسجد ابراہیم میں حضرت ابراہیم علیہ السلام کا مقام ہے۔

یہ اوپر بنایا گیا ہے جہاں خیال کیا جاتا ہے کہ وہ ان کے

خاندان کے دیگر قریبی افراد کے ساتھ زیر زمین دفن ہیں۔

بائیں جانب یہودی عبادت گاہ کی کھڑکی ہے جو مسجد کے بالکل ساتھ ہی بنائی گئی ہے۔

قرآن مجید میں ابراہیم علیہ السلام کا نام 69 مرتبہ آیا ہے۔

وہ ‘خلیل اللہ’ یعنی اللہ کے دوست کے نام سے جانے جاتے ہیں۔

ابراہیم (عليه السلام) کو تین عظیم توحیدی عقائد یہودیت

عیسائیت اور اسلام کا سرپرست سمجھا جاتا ہے۔

اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید میں سورہ آل عمران میں اعلان کیا ہے

اے اہل کتاب (یہود و نصاریٰ)! تم ابراہیم کے بارے میں کیوں

جھگڑتے ہو حالانکہ تورات اور انجیل ان کے بعد تک نازل نہیں ہوئیں۔

 بے شک تم وہ ہو جنہوں نے اس بات میں جھگڑا کیا جس کا تمہیں علم نہیں۔

ابراہیم علیہ السلام نہ یہودی تھے اور نہ عیسائی، بلکہ وہ ایک سچے مسلمان حنیف تھے

اللہ کے سوا کسی کی عبادت نہیں کرتے تھے اور وہ مشرکوں میں سے نہیں تھے۔

بے شک انسانوں میں سب سے زیادہ دعویٰ کرنے والے وہ ہیں

You Might Also Like: Hazrat Dawood (AS) Full Stoy of life in the detail

جنہوں نے ابراہیم کی پیروی کی اور یہ نبی (محمد) اور وہ لوگ جو

ایمان لائے اور اللہ مومنوں کا ولی (حفاظت و مددگار) ہے۔”

ابراہیم علیہ السلام نے اپنے بڑے بیٹے اسماعیل علیہ السلام کے ساتھ مل کر

مکہ مکرمہ میں اپنے ہاتھوں سے پتھر اٹھائے خانہ کعبہ کی تعمیر کی۔

حضرت ابراہیم علیہ السلام کی وفات 175 سال کی عمر میں ہوئی۔

You Might Also Like:The Maqam of Prophet Ishaq (A.S)

You Might Also Like:The Minaret of Prophet Isa (A.S)

Leave a Reply

Your email address will not be published.