کعبہ کا نظارہ

کعبہ کا نظارہ

The Kaba Sight

 

 

میں اللہ کے خانہ کعبہ کو دیکھتا ہوا کبھی نہیں تھکتا۔

وہ مقام جس پر اللہ کی رحمتیں اور

برکتیں مسلسل نازل ہوتی رہتی ہیں۔

اس روئے زمین پر اللہ کے گھر کے مقابلے کی کوئی چیز نہیں ہے۔

لوگ چاہتے ہیں کہ وقت ساکت ہو جائے تاکہ وہ کعبہ کو دیکھتے رہیں۔

ان کی پیاس کبھی بجھتی نہیں بلکہ بڑھتی جاتی ہے۔

ایک دفعہ واشنگٹن کے دورے پر لوگوں نے

مجھے بتایا کہ ایک عورت نے اسلام قبول کر لیا ہے۔

اور مجھ سے کچھ سوالات کیے ہیں۔

انہوں نے مجھے بتایا کہ ان کی وجہ سے

بہت سی غیر مشق کرنے والی مسلم خواتین

نے دوبارہ مشق شروع کر دی تھی۔

،نماز کے وقت وہ اپنے بہترین لباس زیب تن کرتی

جیسے کسی خاص کے لیے خود کو تیار کر رہی ہو

اور نماز شروع کرتے ہی اپنے اردگرد کی ہر چیز سے غافل ہو جاتی۔

ایک مختصر سوال و جواب کے سیشن کے بعد، میں نے اس سے پوچھا

کہ کس چیز نے اسے اسلام قبول کرنے پر اکسایا؟

وہ مجھےسمجھانے لگی۔

میں ایک یہودی تھی اور میرے شوہر ایک

عیسائی تھے جو سعودی عرب میں 

کسی تکنیکی کام کے لیے تعینات تھے۔

میں ہر روز کہیں نہ کہیں سفید لباس میں

ملبوس مسلمان مردوں اور عورتوں کو دیکھا کرتی تھی۔

 میں نے اپنے شوہر سے پوچھا کہ وہ کہاں

جا رہے ہیں تو انہوں نے بتایا

کہ وہ مسلمانوں کے حرم کعبہ کی زیارت کے لیے جاتے ہیں۔

میں نے جانے کی خواہش ظاہر کی لیکن

اس نے مجھے بتایا کہ غیر مسلموں کو

جانے کی اجازت نہیں ہے۔ تاہم، میں پرعزم تھی

اور ہم دونوں سفید کپڑے خرید کر روانہ ہو گئے۔

خوش قسمتی سے ہمیں کسی نے نہیں روکا اور ہم مکہ مکرمہ پہنچ گئے۔

جہاں سے ہمیں کعبہ کا راستہ ملا۔

خانہ کعبہ کو دیکھ کر ہماری آنکھیں جم گئیں۔

اور وقت ساکت سا لگتا تھا۔ کچھ دیر بعد

جب ہم ایک دوسرے کی طرف دیکھنے لگے۔

تو ہم دونوں رو رہے تھے۔ ہم نے اپنی

آنکھوں سے ایک دوسرے سے کہاکہ یہ حق ہے۔

اور ہمیں اسلام قبول کرنا چاہیے۔ مجھے کبھی

کسی نے اسلام کے بارے میں نہیں بتایا۔

لیکن اس گھر پر اتنی برکتیں نازل ہوئیں کہ

انہوں نے میری زندگی کو ہمیشہ کے لیے بدل دیا۔

توحید کی برکات مکہ مکرمہ میں اور نبوت کی

برکات مدینہ منورہ میں نازل ہوتی ہیں۔

کسی نے زندگی میں کچھ نہیں دیکھا اگر

اس نے ان دو مقدس مقامات کو نہیں دیکھا۔

اللہ تمام مسلمانوں کو اپنے گھر کی زیارت نصیب فرمائےآمین۔

 

You May Also Like: The House of Abbas (R.A)

Leave a Reply

Your email address will not be published.