تراویح اور تہجد رمضان 2022  مسجد الحرام کے لیے شیڈول کے ساتھ

 تراویح اور تہجد رمضان 2022  مسجد الحرام کے لیے شیڈول کے ساتھ

 Taraweeh and Tahajjud Ramadan 2022

For Masjid Al Haram With Schedule

 

 

Taraweeh and Tahajjud Ramadan 2022 For Masjid Al Haram With Schedule

 

سعودی حکام نے باضابطہ طور پر ان اماموں کی فہرست جاری کی ہے جو اس سال رمضان المبارک

کے دوران مسجد الحرام  مکہ مکرمہ میں نماز تراویح اور تہجد کی امامت کریں گے   23 مارچ کو حرمین

شریفین کے آفیشل ٹوئٹر اکاؤنٹ کے ذریعے جاری کی ۔

مسجد الحرام میں تراویح اور تہجد کے  6 اماموں کے نام ہیں جو رمضان المبارک 2022 کے

مقدس مہینے کے دوران مسجد الحرام میں نماز تراویح اور تہجد کی امامت کریں گے

، جو اپریل کے شروع میں شروع ہوگا:

شیخ عبداللہ عواد الجہنی

شیخ عبدالرحمن السدیس

شیخ سعود الشریم

شیخ مہر المعقیلی

شیخ شیخ یاسر الدوسری

شیخ بندر بلیلہائ

دریں اثناء امامت کی تقسیم یا رمضان کے مہینے میں یہ امام تراویح کب پڑھائیں گے

اس حوالے سے معلومات بھی حرمین نے شائع کی ہیں جو درج ذیل ہیں۔

مسجد الحرام میں تراویح کا شیڈول

اس سے قبل دنیا بھر کے مسلمانوں کو یہ خوشخبری ملنے پر خوشی ہوئی تھی کہ

اس سال رمضان المبارک کے دوران مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں نماز

تراویح   پوری  حاضری کے ساتھ ادا کی جاسکتی ہے  دو مقدس مساجد کے امور کی جنرل

پریذیڈنسی نے اعلان کیا کہ مقامی اور بین الاقوامی زائرین کو دو مقدس مساجد میں

تراویح ادا کرنے کی اجازت ہے۔

اس خوشخبری کا پوری دنیا کے مسلمانوں نے  خیرمقدم کیا ہے

کیونکہ 2021 میں مسجد حرام میں نماز تراویح 

صرف چند لوگوں کو ادا کرنے کی اجازت تھی  جن میں مسجد الحرام کی انتظامیہ اور

 مقامی سعودی شہری بھی شامل ہیں کیونکہ اس وقت حکومت نے لاک ڈاؤن نافذ کیا تھا۔

 مقامی سعودی شہریوں کے ساتھ ساتھ 

 بین الاقوامی زائرین کو مقدس مساجد میں داخل ہونے سے روک دیا تھا تاکہ کورونا وائرس

کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکا جا سکے۔

مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں نماز تراویح میں شرکت کرنے والے نمازیوں کو بھی اب

احتیاطی تدابیر اور سماجی دوری پر عمل کرنے کی ضرورت نہیں ہے انہیں صرف دو مقدس

مساجد میں داخل ہونے سے پہلے توکلنا ایپ میں اپنی “مدافعتی” حیثیت دکھانے کی ضرورت ہے۔

You May Also Like: Prayers In Ramadan For Taraweeh Dua

Leave a Reply

Your email address will not be published.