حضرت یونس علیہ السلام کی کہانی

حضرت یونس علیہ السلام کی کہانی

Story Of  The Prophet Yunus

 

Story-Of-The-Prophet-Yunus

 

 

یونس ابن متہ (انگریزی میں یونس کو کہا جاتا ہے)

اللہ کے ایک رسول تھے جنہیں شمالی عراق کے ایک شہر

نینویٰ میں بھیجا گیا تھا جس کی آبادی ایک لاکھ سے زیادہ تھی۔

حضرت یونس بظاہر ایک عام آدمی تھے جو نینویٰ کے

ہم وطنوں میں پیدا ہوئے اور پرورش پائی۔

نینویٰ کا عروج والا شہر طویل عرصے سے اللہ کے پیغام کو بھول چکا تھا

اور بت پرستی اور گناہوں سے بھرا شہر بن گیا تھا

اللہ تعالیٰ نے فیصلہ کیا کہ ان کے درمیان پیدا ہونے والے ایک شخص

حضرت یونس کو ایک رسول بنا کر بھیجیں تاکہ وہ اپنے راستے یعنی

روشنی کے راستے کی طرف رہنمائی کریں۔

حضرت یونس فوراً اپنے رب کی خواہش کو پورا کرنے کے لیے نکلے

اور اپنی قوم کو اللہ کی طرف رجوع کرنے اور بت پرستی سے بچنے کی دعوت دی۔

لیکن نینویٰ کے لوگوں نے یونس کو رد کر دیا،

جس طرح بہت سی قوموں نے ان سے پہلے کے نبیوں اور رسولوں کو رد کیا تھا۔

حضرت یونس علیہ السلام ہمت نہ ہارے وہ انہیں اللہ کی

عبادت کی طرف بلاتے رہے اور انہیں اللہ کے خوفناک

غضب کی یاد دلاتے رہے جو ثمود اور قوم نوح پر نازل ہوا تھا۔

لیکن اُنہوں نے اِس بات کو رد کر دیا اور کہا کہ ہم

اور ہمارے آباؤ اجداد نے کئی سالوں سے اِن دیوتاؤں کی

پرستش کی ہے اور ہمیں کوئی نقصان نہیں پہنچا۔

یونس واحد پیغمبر تھے جن کی پوری امت نے اسلام قبول کیا۔

اللہ تعالیٰ نے قرآن پاک میں یونس ابن متہ کی قوم کے بارے میں فرمایا

You May Also Like:The One Sheet For Prophet(S.W)

کیا کوئی بستی ایسی تھی جو عذاب کو دیکھ کر ایمان لے آئی؟

اور اس وقت اس کے ایمان نے اسے عذاب سے بچا لیا؟ سوائے قوم یونس کے۔

جب وہ ایمان لے آئے تو ہم نے دنیا کی زندگی میں ان سے رسوائی کا عذاب ہٹا دیا

اور انہیں تھوڑی دیر کے لیے فائدہ اٹھانے کا موقع دیا۔ [سورہ یونس آیت 98]

 

You May Also Like:The Boat Of Prophet Noah

Leave a Reply

Your email address will not be published.