مالک بن دینار نے اپنے گھر میں چور پکڑا

-مالک بن دینار نے اپنے گھر میں چور پکڑا

 

مالک بن دینار نے اپنے گھر میں چور پکڑا

 

مالک بن دینار بصرہ سے تعلق رکھنے والے ایک اسلامی مبلغ تھے۔

انہوں  نے اپنی زندگی اسلام اور اللہ کے راستے پر چلنے کے لیے وقف کر دی۔

روایات اُنہیں اسلام کے قریب ایک شخص کے طور پر ظاہر کرتی ہیں۔ وہ آج بھی مسلمانوں میں بہت مشہور شخصیت ہیں۔

،ان کی زندگی کے بارے میں بہت سی متاثر کن کہانیاں ہیں

لہذا ہم نے اے زی آفیشل  میں شیئر کرنے کا فیصلہ کیا۔

 

 ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ ایک چور ان کے گھر میں گھس آیا 

 

مالک ابن دینار نماز پڑھ رہے تھے کہ ایک چور دیوار پر چڑھ کر ان کے گھر میں داخل ہوا۔

چور نے چیزوں کی تلاش کی لیکن کچھ نہ ملا۔

جب مالک بن دینار کو محسوس ہوا کہ کوئی ان کے قریب ہے تو انہوں نے جلدی سے نماز ختم کی۔

نماز سے فارغ ہو کر ملک دینار کو معلوم ہوا کہ چور کو کچھ نہیں ملا اور وہ خالی ہاتھ ہے۔

! مالک بن دینار خوفزدہ نہیں ہوئے بلکہ چور کو السلام علیکم کہا

 

 مالک بن دینار نے چور کو خالی ہاتھ نہ جانے دیا۔ 

 

انہوں نے کہا اللہ تمہیں معاف کرے لیکن تم یہاں چیزیں لینے آئے تھے لیکن تمہیں کچھ نہیں ملا۔

میں تمہیں کبھی اپنے گھر سے خالی ہاتھ نہیں چھوڑوں گا۔ ان کی طرف سے ایسا سلوک دیکھ کرچور چونک گیا۔

انہوں نے چور سے کہا کہ وضو کرے اور دو رکعت نماز پڑھے۔ اس طرح آپ اپنے ساتھ کچھ عظیم کے ساتھ چھوڑ سکتے ہیں۔

 

 چور نے دو رکعت نماز پڑھی۔ 

 

مالک بن دینار نے اپنے گھر میں چور پکڑا

 

چور نے ان کی عاجزی دیکھ کر نماز پڑھی۔ مالک بن دینار نے جب تک چاہا نماز پڑھنے کی اجازت دی۔

 

 چور نے روزہ رکھا 

 

چور رات بھر نماز پڑھتا رہا۔

جب سورج طلوع ہونے لگا تو مالک بن دینار نے اسے جانے کو کہا۔

پھر چور نے کہا کہ روزہ رکھ کر مالک کے گھر رہ رہا ہوں۔ ملک نے پھر اتفاق کیا کہ وہ جب تک چاہیں رہ سکتے ہیں۔

 

 چوروں کی زندگی بالکل بدل گئی۔ 

اس کی زندگی بدل گئی، اس نے ساری زندگی حلال کمایا اور گناہ سے دور رہا۔

اس دن چور سامان چرانے آیا لیکن اس کے بجائے ملک کو ملا۔ وہ ان سے چوری کرنا چاہتا تھا لیکن ملک نے اس کا دل چرا لیا۔

جس نےاسے اللہ کا وفادار بندہ بنا دیا۔

 

You may also like: Shadi K Liye Shehar Chor Do By Molana Raza Saqib Mustafai

Leave a Reply

Your email address will not be published.