عبداللہ بن عمرو رضی اللہ عنہ کا قصہ

عبداللہ بن عمرو رضی اللہ عنہ کا قصہ

The Story Of Abdullah Bin Amr(r.a)

 

عبداللہ بن عمرو رضی اللہ عنہ مشہور صحابی عمرو بن عاص رضی اللہ عنہ کے بیٹے تھے۔

اللہ تعالیٰ کے دین کی خدمت میں پوری لگن سے مصروف عمل تھے۔

یہاں تک کہ اسے اپنے والد کی طرف سے زبردستی شادی کرنا پڑی۔

اپنی شادی کی رات عبداللہ بن عمرو نے اپنی نئی دلہن سے دو رکعت نماز پڑھنے کی اجازت مانگی۔

اس نے اسے اجازت دی تو وہ نماز کے لیے چلا گیا۔

اللہ سے گفتگو کے خشوع میں وہ اپنی دلہن کے بارے میں سب کچھ بھول گئے

اور فجر کی اذان تک نماز پڑھتے رہے۔ اگلے دن اس نے خود سے وعدہ کیا

کہ وہ اپنی دلہن کو پالے گا۔ دوسری رات اس نے اپنی بیوی سے ایک بار پھر درخواست کی

کہ اسے دو رکعت نماز پڑھنے کی اجازت دی جائے۔

پھر اپنی شادی کے بارے میں سب بھول گئے اور فجر تک نماز پڑھی۔

ایسا لگاتار تین بار ہوا۔ یہاں تک کہ تیسرے دن عمرو بن عاص اپنی بہو کا معائنہ کرنے آئے

اور ان سے اپنے بیٹے عبداللہ کے بارے میں پوچھا تو اس نے اسے سارا واقعہ سنایا۔

 

جسم کے حقوق

 

عمرو بن عاص اپنے بیٹے کو گلے سے پکڑ کر نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس لے گئے

تاکہ اسے دوسروں کے اور ہم پر ہمارے جسم کے حقوق یاد دلائیں۔

عبداللہ بن عمرو رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا

کیا مجھے خبر نہیں ہوئی کہ تم رات بھر نماز پڑھتے ہو اور دن بھر روزہ رکھتے ہو؟

میں نے کہا ہاں  اس نے کہاایسا نہ کرو۔ رات کو نماز پڑھو اور سو جاؤ۔

چند دنوں کے روزے رکھو اور چند دنوں کے روزے چھوڑ دو کیونکہ تمہارے جسم کا تم پر حق ہے

اور تمہاری آنکھ کا تم پر حق ہے اور تمہارے مہمان کا تم پر حق ہے اور تمہاری بیوی کا تم پر حق ہے۔

مجھے امید ہے کہ آپ کی عمر دراز ہو گی اور آپ کے لیے مہینے میں 3 دن کے روزے رکھنا کافی ہے

کیونکہ ایک نیکی کا ثواب 10 گنا بڑھ جاتا ہے، یعنی گویا آپ نے پورا سال روزے رکھے۔

 

تین روزے

 

میں نے (زیادہ روزہ رکھنے پر) اصرار کیا تو مجھے سخت ہدایت دی گئی۔

میں نے کہا میں اس سے زیادہ روزہ رکھ سکتا ہوں آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا

ہر ہفتے تین روزے رکھو۔ میں نے کہا میں اس سے زیادہ روزے رکھ سکتا ہوں۔

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا اللہ کے نبی داؤد کی طرح روزے رکھو

سال کا 1/2 (یعنی وہ دوسرے دنوں میں روزہ رکھتے تھے)۔اسے مزید اجازت نہیں دی گئی

 

You May Also Like: In Islam The Purpose Of Fasting

Leave a Reply

Your email address will not be published.