مسجد الجن

مسجد الجن

The Masjid al-Jinn

The Masjid al-Jinn

مسجد الجن اس جگہ بنائی گئی ہے جہاں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم جنوں

کے ایک گروہ کو قرآن سنایا کرتے تھے۔

عبداللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ ایک مرتبہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے مکہ

میں صحابہ کرام رضی اللہ عنہم سے فرمایا کہ جو شخص یہ دیکھنا چاہے کہ جنات کا کیا حال ہے۔

وہ ضلع مالا کے مقام پر پہنچے۔ عبداللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں میرے علاوہ وہاں کوئی نہیں آیا۔

جب ہم مکہ مکرمہ کے ضلع مالا کے مقام پر پہنچے تو

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنا پاؤں زمین پر دائرہ کھینچنے کے لیے استعمال کیا۔

پھر آپ نے مجھے دائرے کے اندر بیٹھنے کی ہدایت کی۔ تھوڑا آگے بڑھنے کے بعد

آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے قرآن مجید کی تلاوت شروع کی۔

پھر یوں ہوا کہ جن وہاں جمع ہوتے ہی فوجوں کی شکل میں پہنچنے لگے۔

اتنے جنات آئے کہ میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو نہ دیکھ سکا اور نہ سن سکا۔

پھر آپ صلی اللہ علیہ وسلم ان کے ایک گروہ سے فجر تک گفتگو کرتے رہے۔

(تفسیر ابن کثیر)

 

 مسجد الجن کا اندرونی منظر 

 

The Masjid al-Jinn

عبداللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ سے بھی روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا

میرے پاس جنوں میں سے ایک پکارنے والا آیا اور میں اس کے ساتھ گیا اور ان کو قرآن پڑھ کر سنایا۔

وہ مزید بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم انہیں لے گئے اور

ان کے نقش قدم اور آگ کے نشانات دکھائے۔

مسجد الجن کو مسجد حراس بھی کہا جاتا ہے۔

 

You May Also Like:  Al Shadharawan

You May Also Like: Shoaib Abi Talib History Valley

Leave a Reply

Your email address will not be published.