امام رضا علیہ السلام کا قصہ

امام رضا علیہ السلام کا قصہ

Story Of Imam Raza(a.s)

 

ہمارے آٹھویں امام کے وقت کے بادشاہ، امام رضا علیہ السلام ہارون رشید کے بیٹے مامون رشید تھے۔

مامون رشید نے امام رضا علیہ السلام کو ان کے ظاہری وارث کا عہدہ سنبھالنے پر مجبور کیا تھا

یعنی امام رضا علیہ السلام کو مامون رشید کے بعد بادشاہ کا عہدہ سنبھالنا تھا۔

اگرچہ امام رضا علیہ السلام اس منصب پر فائز نہیں ہونا چاہتے تھے

لیکن امام رضا علیہ السلام نے کھلے عام اسلام کی تبلیغ کے لیے اس سے بھرپور استفادہ کیا۔

لوگوں کو یہ دکھانے کے لیے کہ وہ امام رضا علیہ السلام کے بارے میں کتنا سوچتے ہیں

 مامون رشید نے اپنے دربار کا رنگ سیاہ سے سبز کر دیا

مامون رشید نے امام رضا علیہ السلام کے ساتھ نئے سکے بھی بنائے۔ 

ہر امام کو ایک خاص چیز کے لیے یاد کیا جاتا ہے

 امام زین العابدین علیہ السلام  بیماری میں 4 امام ۔

 امام جعفر صادق علیہ السلام – رزق کے لیے 6ویں امام

اور اسی طرح ہمارے آٹھویں امام رضا علیہ السلام کو اس وقت پکارا جاتا ہے

جب کوئی سفر پر جانے والا ہو۔

 

 امام رضا علیہ السلام کا دوسرا نام 

 

امام رضا علیہ السلام کو امام ضامن بھی کہا جاتا ہے۔

جب مسلمان سفر پر جاتے ہیں تو وہ اپنے ساتھ ایک چیز لے جاتے ہیں

جسے امام ضامن (امام رضا علیہ السلام کا دوسرا نام) کہا جاتا ہے

جو کہ کپڑے میں بندھے ہوئے پیسے ہوتے ہیں۔

یہ روایت غالباً امام رضا علیہ السلام کے زمانے سے آئی ہے

جب لوگ اپنے ساتھ مال لے جاتے تھے خاص طور پر اس لیے کہ

اس پر امام علیہ السلام کا نام تھا۔ چونکہ امام رضا علیہ السلام کے ہم عصر عباسی

خلیفہ مامون رشید نے ان پر امام رضا علیہ السلام کے نام کے سکے نقش کر رکھے تھے۔

 اس لیے مسلمانوں کے لیے امام رضا علیہ السلام کا نام اپنے ساتھ رکھنا بہت آسان تھا۔

خاص طور پر جب وہ سفر پر گئے تھے۔

امام رضا علیہ السلام کو امام ضامن علیہ السلام کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔

  کا ​​مطلب ہے ضمانت دینے والا۔

 معجزاتی واقعہ 

 

 

ایک دن جب امام رضا علیہ السلام مدینہ سے مرو (خراسان) کے تاریخی سفر پر تھے

تو ایک جنگل میں امام رضا علیہ السلام ایک شکاری سے ملے جو ایک ہرن کو مارنے والا تھا۔

ہرن بھاگنے کی کوشش کر رہی تھی جب اس نے امام رضا علیہ السلام کو دیکھا تو اس سے کچھ کہا۔

امام رضا علیہ السلام نے شکاری سے کہا کہ وہ ہرن کو آزاد کر دے

تاکہ وہ جا کر اپنے چھوٹے چھوٹے ہرنوں کو دودھ پلائے جو بہت بھوکے تھے۔

امام رضا علیہ السلام نے شکاری کو یہ بھی بتایا کہ ایک

بار ہرن اپنے بچوں کو دودھ پلا دے تو وہ واپس آجائے گی۔

شکاری نے ہرن کو جانے کی اجازت دی کیونکہ حضرت امام رضا علیہ السلام

نے اس سے کہا تھا لیکن اس نے یہ نہیں سوچا تھا کہ ہرن واپس آئے گا۔

لیکن امام رضا علیہ السلام شکاری کے ساتھ انتظار کرتے رہے یہاں تک کہ

ہرن اپنے بچوں کے ساتھ واپس آجائے۔ شکاری اس معجزاتی واقعہ کو دیکھ کر حیران رہ گیا

اور اس نے امام رضا علیہ السلام کی تعظیم کے لیے ہرن کو آزاد کر دیا۔

اس تاریخی واقعہ کے بعد امام رضا علیہ السلام امام ضامن علیہ السلام کے نام سے مشہور ہوئے۔

 

You May Also Like:Story Of Prophet Muhammad(SAW)

You May Also Like:The Story Of Tribe of Haleema

Leave a Reply

Your email address will not be published.