امام حسن عسکری علیہ السلام کی زندگی کا واقعہ

امام حسن عسکری علیہ السلام کی زندگی کا واقعہ

Story From Life Of Imam Hasan Askari(a.s)

Story From Life Of Imam Hasan Askari(a.s)

 

ہمارے گیارہویں امام امام حسن عسکری کی امامت کے ابتدائی ایام میں

جو اپنے والد امام علی نقی کے بعد 254ھ/868 عیسوی میں 22 سال کی عمر میں ہوئے

المعتز عباسی خلیفہ تھے۔ جب مؤخر الذکر معزول کیا گیا تو اس کا جانشین المحتدی بن الوثیق نے کیا۔

صرف گیارہ ماہ اور ایک ہفتہ کے مختصر دور حکومت کے بعد المتمد المتوکل کا سب سے بڑا

زندہ بچ جانے والا بیٹا تخت نشین ہوا۔ ان کے دور حکومت میں امام حسن عسکری علیہ السلام

کو بالکل سکون نہیں ملا۔ اگرچہ عباسی خاندان مسلسل پیچیدگیوں اور خرابیوں میں مبتلا تھا

لیکن ہر خلیفہ نے امام حسن عسکری علیہ السلام کو قید رکھنا ضروری سمجھا۔

پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی ایک روایت یہ ہے کہ پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم

کے بعد آپ کی نسل (اہل بیت) میں سے بارہ جانشین ہوں گے، جن میں سے آخری

امام مہدی علیہ السلام ہوں گے۔حکومت پر کتاب (کتاب الامارہ)

صحیح مسلم :: کتاب 20 : حدیث 4480یہ جابر بن کی روایت سے مروی ہے۔

سمرہ رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو فرماتے سنا

 

عالم اسلام

 

اسلام اس وقت تک غالب رہے گا جب تک کہ بارہ خلفاء نہ ہوں۔ پھر حضور صلی اللہ علیہ وسلم

نے ایک ایسی بات کہی جو میری سمجھ میں نہ آئی۔ میں نے اپنے والد سے پوچھا: انہوں نے کیا کہا؟

اس نے کہا: اس نے کہا ہے کہ یہ سب (بارہ خلفاء) قریش میں سے ہوں گے۔فیصلے (احکام)

صحیح بخاری :: کتاب 9 :: جلد 89 :: حدیث 329جابر بن سمرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے

کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو فرماتے

ہوئے سنا کہ بارہ مسلمان ہوں گے (جو تمام عالم اسلام پر حکومت کریں گے)۔

پھر اس نے ایک جملہ کہا جو میں نے نہیں سنا۔ میرے والد نے کہا کہ یہ سب (وہ حکمران) قریش سے ہوں گے۔

عباسی اچھی طرح جانتے تھے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے حقیقی جانشین یہی امام ہیں۔

امام حسن عسکری علیہ السلام کے گیارہویں ہونے کی وجہ سے ان کا بیٹا یقیناً 12واں یا آخری ہوگا۔

انہوں نے، اس کی زندگی کو اس طرح ختم کرنے کی کوشش کی، تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ

اس کے بعد کوئی نہیں ہوگا۔ لیکن یہ عباسی خلفاء یہ بھول گئے تھے کہ کس طرح فرعون نے

بنی اسرائیل کے ہاں پیدا ہونے والے تمام بچوں کو قتل کر کے حضرت موسیٰ علیہ السلام کی

حکومت کو روکنے کی کوشش کی تھی، پھر بھی وہ خود اس کی پرورش کر رہے تھے جسے وہ قتل کرنا چاہتے تھے۔

 

سادہ قید امام علی نقی علیہ السلام

 

جیسا کہ ان کے والد پر عائد سادہ قید امام علی نقی علیہ السلام کو امام حسن عسکری علیہ السلام کے لیے

ناکافی سمجھا جاتا تھا، اس لیے انہیں اپنے خاندان سے دور قید کر دیا گیا۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ

دو حکومتوں کے درمیان انقلابی وقفوں نے اسے آزادی کی مختصر مدت فراہم کی۔ اس کے باوجود

نئے خلیفہ کے تخت پر آتے ہی اس نے اپنے پیشرو کی پالیسی پر عمل کیا اور امام حسن عسکری علیہ السلام

کو دوبارہ قید کر دیا۔ امام حسن عسکری علیہ السلام کی مختصر زندگی (28 سال) اس لیے زیادہ تر تہہ خانے میں گزری۔

 

You May Also Like: Story Of Imam Hasan (a.s.)

Leave a Reply

Your email address will not be published.