حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کی زندگی کا واقعہ

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کی زندگی کا واقعہ

Story From The Life Of Hazrat Ayesha (r.a)

Story From The Life Of Hazrat Ayesha (r.a)

 

حضرت نعمان بن بشیر رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ ایک مرتبہ حضرت ابوبکر رضی اللہ عنہ

نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے گھر تشریف لے گئے اور داخل ہونے کی اجازت چاہی۔

لیکن جب دروازے پر کھڑے ہوئے تو انہوں نے اپنی صاحبزادی حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا

کی آواز سنی، جو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے بحث کر رہی تھیں

جس کی وجہ سے حضرت ابوبکر رضی اللہ عنہ ناراض ہو گئے

اور جب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا۔

اس نے اسے اندر جانے کی اجازت دی، پہلے اس نے اپنی بیٹی کو تھپڑ مارنے

کے لیے ہاتھ اٹھایا، لیکن نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے مداخلت کی اور اسے بچا لیا۔

جب حضرت ابوبکر رضی اللہ عنہ اسے سزا نہ دے سکے تو غصے میں گھر سے نکلے

اور کچھ دنوں تک ان دونوں کو نہ دیکھا (اپنی بیٹی پر غصہ ہونے کی وجہ سے

 

جنگ میں شامل

 

اور نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے سامنے اپنے غصے کا اظہار کرتے ہوئے شرمندہ ہونے کی وجہ سے)۔

پھر حضرت ابوبکر رضی اللہ عنہ دوبارہ آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کے گھر تشریف لے گئے

اور داخل ہونے کی اجازت چاہی۔ اجازت ملنے کے بعد جب اندر آئے تو دیکھا

کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اور حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا خوشگوار موڈ میں ہیں۔

اس نے ان سے مخاطب ہو کر کہا، مجھے اپنے امن میں شامل کرو

جیسا کہ تم نے مجھے اپنی جنگ میں شامل کیا ہے۔

نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ یقیناً ہم نے کیا، یقیناً ہم نے کیا۔

 

You May Also Like: The House of the Abu Bakr (R.A)

Leave a Reply

Your email address will not be published.