روضہ افطار سیرت نبویﷺ سے

روضہ افطار سیرت نبوی ﷺ سے

Roza Iftar From Life Of Prophet Muhammad  (SAW)

Roza Iftar From Life Of Prophet Muhammad

 

انس مالک ان اصحاب میں سے تھے جنہوں نے کئی سالوں تک پیغمبر اسلام (ص) کی خدمت کی۔

اس لیے وہ رسول اللہ کی عادات کو اچھی طرح جانتا تھا۔

حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم جب روزہ رکھتے تو عام طور پر دودھ اور کھجور سے افطار فرماتے

اور رات کے چھوٹے سے وقت میں سحری کے لیے سادہ کھانا کھا لیتے۔

ایک دن حضرت انس رضی اللہ عنہ کو معلوم ہوا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم روزے سے ہیں۔

چنانچہ اس نے اپنی افطاری کا انتظام کیا۔ اس نے دودھ اور کھجور تیار رکھی۔

افطار کے وقت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم افطاری کے لیے تشریف نہیں لائے۔

انس نے سوچا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے دعوت قبول کی ہو گی اور کہیں اور افطار کیا ہو گا۔

چنانچہ انس نے کھانا خود کھایا اور اعتکاف کیا۔

 

واقعہ کا ذکر

 

جب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ایک دوسرے صحابی کے ساتھ گھر میں داخل ہوئے

تو انس رضی اللہ عنہ نے اس صحابی سے دریافت کیا کہ کیا آپ صلی اللہ علیہ وسلم کھانا کھا چکے ہیں؟

رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کو کسی ضروری کام میں تاخیر ہوئی اور آپ نے کھانا نہیں کھایا۔

انس کو بہت شرمندگی محسوس ہوئی۔

اگر آپ صلی اللہ علیہ وسلم کھانا مانگتے تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے سامنے کچھ نہیں بچا تھا۔

پھر بھی وہ انتظار کے ساتھ انتظار کر رہا تھا، رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو صورتحال بتانے کے لیے تیار تھا۔

حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے فوراً محسوس کیا کہ انس ہچکچا رہے ہیں اس لیے وہ خاموش رہے

اور بھوکے بستر پر لیٹ گئے۔

انس رضی اللہ عنہ کہتے تھے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی زندگی میں اس واقعہ کا ذکر کسی سے نہیں کیا۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.