کوہ صفا

کوہ صفا

The Mount Safa

The Mount Safa

 

کوہ صفا (جبل صفا) مسجد الحرام کے اندر ایک چھوٹا پہاڑ ہے۔

یہ وہ مقام ہے جہاں سے حجاج کرام ہاجرہ (علیہ السلام) کے

اعمال کی تقلید کے لیے مساعی میں سعی شروع کرتے ہیں۔

اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید میں سورہ بقرہ میں صفا و مروہ کے پہاڑوں کا ذکر فرمایا ہے

بے شک صفا اور مروہ اللہ تعالیٰ کی نشانیوں (مخصوص نشانیوں) میں سے ہیں۔ [2:158]

عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہما بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم

صفا پہاڑ پر چڑھے تو اللہ تعالیٰ نے سورہ شعراء میں یہ آیت نازل فرمائی

اور اپنے قبیلے کو خبردار کر دو قریبی رشتہ داروں سے۔ [26:214]

 

 کوہ صفا کی بنیاد 

 

 

صفا پہاڑ پر چڑھنے کے بعد اس نے یا صباحاہ (ایک عربی لفظ جب

کوئی مدد کی اپیل کرتا ہے یا کسی خطرے کی طرف دوسروں کی توجہ مبذول کرتا ہے) کا نعرہ لگایا۔

جب مکہ کے لوگ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے گرد جمع ہو گئے تو

آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے ان سے فرمایا کہ اگر میں تمہیں بتاؤں کہ

اس پہاڑ کی دوسری طرف کی وادی سے گھڑ سوار تم پر حملہ کرنے

کے لیے آ رہے ہیں تو کیا تم میری بات پر یقین کرو گے؟

ہاں انہوں نے جواب دیا کہ ہم نے آپ کو ہمیشہ سچا پایا ہے۔

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ میں تمہیں آنے والے سخت عذاب سے صاف ڈرانے والا ہوں۔

اس واضح تشبیہ کے بعد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ان سے یہ

اعلان کر کے اپنے آپ کو بچانے کے لیے کہا کہ اللہ ایک ہے

اور وہ محمد صلی اللہ علیہ وسلم اس کے رسول ہیں۔

اس نے انہیں یہ سمجھانے کی کوشش کی کہ اگر وہ شرک سے چمٹے ہوئے ہیں

اور اس کے لائے ہوئے پیغام کو رد کر دیں گے تو انہیں اللہ کے عذاب کا سامنا کرنا پڑے گا۔

ابو لہب (اس کے چچا) نے کہا تم ہلاک ہو جاؤ آپ نے ہمیں صرف

اسی لیے جمع کیا پھر ابو لہب چلا گیا اس پر سورہ لہب نازل ہوئی۔

 کوہ صفا کا آغاز 

 

 

Start of the Mount Safa

 

فتح مکہ کے بعد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم حجر اسود پر

تشریف لے گئے اور پھر طواف کرنے لگے۔

طواف سے فارغ ہونے کے بعد آپ صلی اللہ علیہ وسلم

کوہ صفا پر چڑھ کر کعبہ کی طرف منہ کر کے اللہ کی حمد و ثنا کے بعد دعا کرنے لگے۔

یہیں سے آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے (مقامی مکہ والوں کو) اعلان کیا

کہ جو ابو سفیان کے گھر میں داخل ہو گا اسے عام معافی ہے اور

جو اس کے گھر کا دروازہ بند کر دے گا اسے عام معافی ہے۔

دار ارقم کی بنیاد کوہ صفا کے دامن میں تھی۔

You Might also Like: Hajar al-Aswad

Leave a Reply

Your email address will not be published.