اسلامی علماء نے تمباکو نوشی کی ممانعت کا فتویٰ جاری کر دیا

اسلامی علماء نے تمباکو نوشی کی

ممانعت کا فتویٰ جاری کر دیا

Islamic Scholars Issue Fatwa

To Prohibit Smoking

 

 

سی آئی آئی,کے ساتھ سوسائٹی فار دی پروٹیکشن

آف دی رائٹس آف دی چائلڈ کے

زیر اہتمام ایک کانفرنس میں کئی اسلامی سکالرز جمع تھے۔

کانفرنس میں اسلامی نظریاتی کونسل نے ایک حکم (فتویٰ) جاری کیا

جس میں کہا گیا کہ سگریٹ نوشی کے انسانی صحت پر بہت سے

منفی اثرات اور غیر قانونی ہے۔

سگریٹ کا منفی اثر نہ صرف تمباکو نوشی کرنے والوں کے لیے نقصان دہ ہے۔

بلکہ سگریٹ کے دھوئیں سے متاثر ہونے والوں کو بھی متاثر کرتا ہے۔

پارلیمانی امور کے وزیر مملکت علی محمد خان نے بھی

سگریٹ نوشی کے خطرات سے خبردار کیا ہے۔

  نوجوان ملک میں ضرورت سے زیادہ تمباکو

نوشی کے اثرات دراصل آبادی

کی عمر کے ساتھ ساتھ ظاہر ہوں گے اور تمباکو کے

متعلق صحت کے مختلف مسائل جیسے دل کی دائمی بیماری

پھیپھڑوں اور تقریباً تمام قسم کے کینسر پیدا ہوتے ہیں۔

خان نے اس بات پر بھی زور دیا کہ تمباکو کے استعمال کو

سی آئی آئی کے چیئرمین قبلہ ایاز نے وضاحت کی کہ

تمباکو نوشی ان سرگرمیوں میں شامل ہے

جسے اسلامی قانون کے مطابق روکنا ضروری ہے۔

 پاکستان میں چھ سے 15 سال کی عمر کے 1,200 بچوں نے

ہر روز تمباکو نوشی شروع کر دی ہے جس کی وجہ سے

سالانہ 170,000  تمباکو نوشی سے

ہونے والی اموات کی ایک بڑی تعداد ہے۔

 پاکستان  2019 میں تمباکو نوشی کے

متعلق بیماری یا موت کی وجہ سے

ہونے والی کل لاگت 615.07 بلین روپے تک پہنچ گئی

 تمباکو کی صنعت کے کل ٹیکس زیادہ ہے

 جو کہ 2019 میں صرف 120 بلین روپے ہے

 کل لاگت کا صرف 200 فیصد ہے۔

 تمباکو کی مصنوعات کی فروخت کو غیر قانونی قرار دے

کر تمباکو نوشی کے خاتمے کے لیے فوری اقدامات کرے گی۔

 

You may also like: Royal Photographer Disclosure  Princess DianaHe considered accepting Islam because of his love

Leave a Reply

Your email address will not be published.