اسلام میں دعا کی اہمیت

اسلام میں دعا کی اہمیت

Importance Of  Dua In Islam

 

Importance-Of-Dua-In-Islam

 

نعمان بن بشیرنے فرمایا کہ دعا عبادت ہے۔

نعمان بن بشیر نے یہ آیت پڑھی۔

وَقَالَ رَبُّكُمُ ادْعُونِي أَسْتَجِبْ لَكُمْ

اور تمہارے رب نے فرمایا ہے مجھے پکارو میں تمہاری دعا قبول کروں گا

یہ آیت ماخذ ترمذی، ابوداؤد، ابن ماجہ میں موجود ہے۔

عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہما بیان کر تےہیں کہ

جو کچھ نازل ہوا ہے اور جو نہیں اتارا گیا ہے

اوراے اللہ کے لوگو! دعا سب کے لیے فائدہ مند ہے (ترمذی)

:ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا

اللہ اس شخص سے سخت ناراض ہوتا ہے جو اللہ سے دعا نہیں کرتا۔ (ترمذی)

دعاکے بارے میں احادیث

حدیث نمبر 1

سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہا بیان کرتی ہیں کہ

(رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو تمام دعائیں پسند تھیں اور باقی کو چھوڑ دیا۔ (ابو داؤد

حدیث نمبر 2

:محمدصلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا

”جو شخص حاضر نہ ہو اس کی دعا اللہ جلد قبول کر لیتا ہے۔ (ترمذی اور ابوداؤد)

حدیث نمبر 3

:ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا

تین دعائیں ایسی ہیں جن کی قبولیت میں کوئی شک نہیں 

پہلی دعا باپ کی دعا۔

دوسری دعا مسافر کی دعا۔

تیسری دعا مظلوم کی دعا(تیمذی، ابن ماجہ) ۔

حدیث نمبر 4

اسماء بنت یزید رضی اللہ عنہا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے روایت کرتی ہیں کہ

اسم اعظم  دو آیات میں ہے اور آل عمران کی ابتداء میں ہے۔

وَإِلَـٰهُكُمْ إِلَـٰهٌ وَاحِدٌ ۖ لَّا إِلَـٰهَ إِلَّا هُوَ الرَّحْمَـٰنُ الرَّحِيمُ 

اور تمہارا معبود ایک ہی معبود ہے جس کے سوا کوئی معبود نہیں بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے

ٱللَّهُ لَآ إِلَـٰهَ إِلَّا هُوَ ٱلْحَىُّ ٱلْقَيُّومُ

اللہ! اس کے سوا کوئی عبادت کے لائق نہیں –

ہمیشہ زندہ رہنے والا، قائم رہنے والا۔

حدیث نمبر 5

: رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا

(مجھے اس دنیا اور اس کی تمام چیزوں سے زیادہ محبوب ہے۔ (مسلم

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے یہ حدیث پڑھی۔

سُبْحَانَ اللَّهِ وَالْحَمْدُ لِلَّهِ وَلاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ وَاللَّهُ أَكْبَرُ

اللہ پاک ہے اورتمام تعریفات اللہ کے لیے ہیں

اور اللہ کے علاوہ اور کوئی معبود برحق نہیں اور اللہ ہی سب سے بڑا ہے“۔

حدیث نمبر 6

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ ہر نبی کی ایک خاص دعا تھی جو اللہ کی بارگاہ میں قبول ہوتی ہے،

تمام انبیاء اپنی دعاؤں میں جلدی کرتے تھے، قیامت کے دن

اپنی امت کی شفاعت کے لیے میں نے اپنی دعا محفوظ کر لی۔

میری دعا میری امت کے ہر اس شخص تک پہنچے گی

جس نے اللہ کے ساتھ کسی کو شریک نہیں بنایا۔”۔

 

You May Also Like: Duas For Days Of Ramadan Important

You May Also Like: Importance And Ahkam Of  Animal Qurbani

Leave a Reply

Your email address will not be published.