امام جعفر صادق علیہ السلام اور ان کا علم

امام جعفر صادق علیہ السلام اور
ان کا علم

Imam Jafar Sadiq (AS) and
Their Knowledge

 

Imam Jafar Sadiq (AS) and Their Knowledge

 

امام صادق علیہ السلام کو قرآن حدیث (روایات) اور دیگر مذہبی علوم میں اپنے وقت

کے سب سے زیادہ علم رکھنے والے کے طور پر جانا جاتا تھاامام صادق علیہ السلام کی

کلاسوں میں ہزاروں حاضرین شریک تھےوہ لوگ جنہوں نے اتفاق کیا، جنہوں نے

اختلاف کیا، اور وہ لوگ جو صرف سننا چاہتے تھدنیا کے مختلف حصوں سے عظیم امام

 

جابر ابن حیان

 

کو سننے کے لیے آئے امام کے مشہور شاگردوں میں سے ایک جابر ابن حیان تھے۔

جابر عظیم کیمیا دان تھے جنہیں مغربی دنیا میں گیبر کے نام سے جانا جاتا ہے۔

امام نے ملحدوں اور مختلف مکاتب فکر کے پیروکاروں کے لیے بہت سی بحثیں

اور دانشمندانہ جوابات دیےایک موقع پر کسی نے امام صادق علیہ السلام سے کہا

کہ آپ مجھے خدا دکھائیں امام نے جواب دیا: سورج کو دیکھواس آدمی نے کہا

کہ وہ سورج کی طرف نہیں دیکھ سکتا کیونکہ وہ بہت زیادہ روشن تھا۔

امام صادق علیہ السلام نے فرمایااگر تم مخلوق کو نہیں دیکھ سکتے تو خالق کو دیکھنے کی امید کیسے رکھ سکتے ہو

امام صادق علیہ السلام اپنے اصحاب کو احادیث کی توثیق اور قوانین کو جاننے کے بارے میں

عمومی خاکہ پیش کرتے تھےامام علیہ السلام نے ایک بار فرمایاہم سے روایت کی گئی

کسی حدیث کو قبول نہ کرو سوائے اس کے جو قرآن و سنت کے موافق ہو

یا اگر تم اس میں کسی سابقہ ​​روایت سے (مفہوم پر) گواہ پاؤ۔

 

میری روایت

 

امام نے اپنے اصحاب کے لیے ایک اور عام قاعدہ کی تصدیق بھی فرمائی

میری روایت میرے والد کی روایت ہے، اور میرے والد کی روایت

میرے دادا کی روایت ہےاور میرے دادا کی روایت علی ابن ابو طالب کی روایت ہے۔

 اور علی کی روایت رسول اللہ کی روایت ہے اور رسول اللہ کی روایت اللہ تعالیٰ کا کلام ہے۔

ابھی زیادہ عرصہ نہیں گزرا تھا کہ عباسی خاندان نے مسلم دنیا پر اپنی گرفت مضبوط کر لی

اور امام جعفر صادق علیہ السلام جیسے انسان کے خطرے کو محسوس کرنا شروع کر دیا۔

عباسیوں کو خدشہ تھا کہ اہل بیت کے علم سے مسلح آبادی ان کی سیاست کے لیے

اچھی نہیں ہوگیعباسی خلیفہ منصور الدوانیقی نے 25 شوال 148 ہجری

کو امام کو زہر دے دیا امام جعفر صادق کو مدینہ کے قبرستان بقیع میں دفن کیا گیا۔

ہر سال ہزاروں مسلمان اس کی زیارت کرتے ہیں۔

 

You May Also Like:The Motivational Story

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.