ابوجہل کی تاریخ زندگی

ابوجہل کی تاریخ زندگی

History Life Of Abu Jahal

History-Life-Of-Abu-Jahal

 

ابوجہل کا گھر  مساعی کے باہر لیمپ پوسٹ پر ہے۔

ابوجہل رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا اور اسلام کے بدترین دشمنوں میں سے ایک تھا۔

آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے  فرعون قرار دیا ہے۔

ابو جہل کا اصل نام عمرو بن ہشام تھا۔

 قریش میں ابو جہل کا نام ابو حکم  کہا جاتا تھا۔

کیونکہ  ابو جہل کو عقلمند آدمی سمجھا جاتا تھا۔

ابو جہل کو اسلام سے دشمنی تھی اسی وجہ  سے مسلمانوں نے ابوجہل  کا نام دیا تھا۔

ابو جہل قریش کے قبیلہ بنو مخزوم کا فرد تھا۔

ابوجہل رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے حقیقی چچا نہیں تھے ۔

بلکہ اپنے والد کے چچازاد بھائی تھے۔

ابوجہل  ایک کٹر مشرک تھا۔

اور رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو سخت ناپسند کرتا تھا۔

ابوجہل رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی سرزنش اور  تذلیل کرتا تھا۔

جب کسی قبیلے کے درجہ بندی میں کوئی مسلمان مذہب تبدیل کرتا تو

ابو جہل مذہب تبدیل کرنے والے کو سرزنش کرتاتھا۔

ابو جہل ا پنے ساتھی قبائلیوں کے سامنے اس کا مذاق اڑاتاتھا۔

مشرک قریش سے تعلق رکھنے والے غلاموں کو سخت ترین سزا دی گئی۔

ابوجہل نے  ایک غلام حارثہ بنت الممل رضی اللہ عنہا کو

مذہب تبدیل کرنے پر اس حد تک مارا کہ 

غلام حارثہ بنت الممل رضی اللہ عنہا کی بینائی ختم ہو گئی۔

ابوجہل نے عمار رضی اللہ عنہ کی والدہ سمیہ بنت خیاط پر حملہ کیا

اور ان کی شرمگاہ میں نیزے سے وار کر کے انہیں شدید زخمی کر دیا۔

سمیہ بنت خیاط بابرکت خاتون پہلی تھیں جنہوں نے اسلام کی راہ میں شہادت پائی۔

 

 

You Might Also Like: Hazrat Muhammad(S.W.S) Speech In Masjid Nimrah

You Might Also like: The Mataf (Area of the Circumambulation)

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.