حضرت داؤد علیہ السلام کی مکمل کہانی، زندگی کے تمام واقعات تفصیل سے

حضرت داؤد علیہ السلام کی مکمل کہانی

Hazrat Dawood (AS)
Full Stoy of life in the detail

 

حضرت داؤد علیہ السلام کی مکمل کہانی

حضرت داؤد (ع) جسے یہودی صحیفوں میں ڈیوڈ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے

دسویں صدی میں یروشلم میں پیدا ہوئے۔

وہ گولیت کو شکست دینے اور اسرائیل کا بادشاہ بننے کے لیے جانا جاتا تھا۔

قرآن مجید میں حضرت داؤد علیہ السلام کا نام 16 مرتبہ آیا ہے۔

You may also like: Shadi K Liye Shehar Chor Do By Molana Raza Saqib Mustafai

زبور اللہ تعالیٰ کی طرف سے حضرت داؤد علیہ السلام پر نازل ہوئی

جس طرح تورات موسیٰ علیہ السلام پر نازل ہوئی تھی۔

اور حضرت عیسیٰ (ع) پر انجیل (انجیل) اور

 اسی طرح نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے قرآن مجید کو اللہ کی طرف سے آخری مقدس کتاب کے طور پر حاصل کیا۔

طالوت اور اس کی فوج اپنی فوج کے ساتھ فلسطین کو فتح کرنے کے لیے نکلی۔

فلسطینی فوج میں ایک بڑا دیو ہیکل بے رحم آدمی تھا جس کا نام جالوت تھا۔

طالوت کی آدھی فوج اس شخص کو دیکھ کر وہاں سے چلی گئی تھی

یہ وہ وقت تھا جب حضرت داؤد علیہ السلام جالوت سے لڑنے کے لیے آگے آئے اور اسے لڑائی میں شکست دی۔

 

 شادی 

 

طالوت نے جنگ میں وعدہ کیا تھا کہ وہ اپنی بیٹی کی شادی اس سے کرے گا جس نے جالوت کو شکست دی

 اس نے اپنا وعدہ پورا کیا اور اس کی شادی اپنی بیٹی میکیل سے کر دی۔

 

 اس کی خوبصورت آواز تھی۔  

 

ان کی آواز ایسی خوبصورت تھی کہ جب وہ اللہ کی حمد و ثنا پڑھتا تھا تو پرندے

پودے اور پہاڑ بھی ان کی آواز سن کر لطف اندوز ہوتے تھے۔

 

 داؤد علیہ السلام جانوروں کی زبان سمجھ سکتے تھے۔  

 

داؤد علیہ السلام کو اللہ سبحانہ و تعالیٰ کی طرف سے یہ صلاحیت دی گئی تھی کہ

وہ جانوروں کی زبان سمجھنے کے قابل ہو گے۔

کامیابی دیکھ کر طالوت نے داؤد ع سے حسد کیا اور

 اسے ایک مہلک جنگ میں بھیج دیا جس میں داؤد علیہ السلام جیت گئے

 اس کے بعد داؤد ع کی بیوی نے اسے بتایا کہ اس کا باپ اسے قتل کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے

اور اسے اسرائیل چھوڑنے کو کہا تو وہ چلا گیا۔

 

 جب داؤد علیہ السلام بنی اسرائیل کے بادشاہ بنے۔ 

 

حضرت داؤد علیہ السلام کی مکمل کہانی

 

اسرائیل سے نکلنے کے بعد، داؤد (ع) نے ایک غار میں آرام کیا، جہاں ایک ایک کر کے بہت سے لوگ آئے

اور طالوت سے چھٹکارا پانے کے لیے ان سے مدد طلب کی کیونکہ وہ مملکت میں ہر آدمی کے ساتھ برا سلوک کر رہا تھا۔

طالوت کو یہ معلوم ہونے کے بعد کہ داؤد (ع) کے پاس مضبوط آدمی ہیں

اس نے داؤد (ع) کو قتل کرنے کا فیصلہ کیا، لیکن داؤد (ع) نے طالوت کو قتل نہ کرکے

 ثابت کیا کہ ان کا پیغام نفرت نہیں محبت   کا ہے اور داؤد علیہ السلام نے اسے معاف کردیا۔

چند سال بعد طالوت ایک جنگ میں مر گیا اور حضرت داؤد علیہ السلام کو اسرائیل کا بادشاہ بنا دیا گیا

 

You Might Also Like: Shadi K Liye Shehar Chor Do By Molana Raza Saqib Mustafai

Leave a Reply

Your email address will not be published.