اسلام کے لیے پانچ دعائیں

اسلام کے لیے پانچ دعائیں

Five Duas For Islam

 

Five Duas For Islam

 

 نمبر 1 

 

 دنیا اور آخرت کے لیے دعا 

 

رَبَّنَا آتِنَا فِي الدُّنْيَا حَسَنَةً وَفِي الْآخِرَةِ حَسَنَةً وَقِنَا عَذَابَ النَّارِ

’’اے ہمارے رب ہمیں دنیا میں بھی بھلائی دے اور آخرت میں بھی بھلائی دے اور ہمیں آگ کے عذاب سے بچا۔‘‘

سورہ بقرہ آیت 201

 

 نمبر 2 

 

 آمنہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم 

 

آمَنَ الرَّسُولُ بِمَا أُنْزِلَ إِلَيْهِ مِنْ رَبِّهِ وَالْمُؤْمِنُونَ ۚ كُلٌّ آمَنَ بِاللَّهِ وَمَلَائِكَتِهِ وَكُتُبِهِ وَرُسُلِهِ

لَا نُفَرِّقُ بَيْنَ أَحَدٍ مِنْ رُسُلِهِ ۚ وَقَالُوا سَمِعْنَا وَأَطَعْنَا ۖ غُفْرَانَكَ رَبَّنَا وَإِلَيْكَ الْمَصِيرُ

 

“رسول [محمد (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)] اس پر ایمان رکھتے ہیں

جو ان پر ان کے رب کی طرف سے نازل کیا گیا ہے

اور مومن بھی ہر ایک اللہ، اس کے فرشتوں، اس کی کتابوں

اور اس کے رسولوں پر ایمان رکھتا ہے۔

 “ہم اس کے رسولوں میں سے ایک دوسرے کے درمیان کوئی فرق نہیں کرتے” –

 “ہم نے سنا اور اطاعت کی اے ہمارے رب، ہم تیری بخشش چاہتے ہیں

اور تیری ہی طرف [سب کو] لوٹ کر جانا ہے۔

سورہ بقرہ آیت 285

 

 نمبر 3 

 

 کیا غیر مسلموں کے لیے دعا کرنا جائز ہے؟ 

 

اس بارے میں کچھ بحث ہے کہ کیا ہمیں کافروں کے لیے دعا کرنے کی اجازت ہے؟

جس آیت کا اکثر حوالہ دیا جاتا ہے وہ یہ ہے

’’نبی اور ایمان والوں کے لیے یہ کام نہیں کہ وہ مشرکوں کے لیے استغفار کریں

خواہ وہ رشتہ دار ہی کیوں نہ ہوں جب کہ ان پر یہ واضح ہو چکا ہے کہ وہ جہنم کے ساتھی ہیں۔

اور ابراہیم کی اپنے باپ کے لیے معافی کی درخواست صرف اس وعدے کی وجہ سے تھی جو اس نے ان سے کیا تھا۔

لیکن جب ابراہیم پر ظاہر ہو گیا کہ ان کا باپ اللہ کا دشمن ہے تو اس نے ان سے علیحدگی اختیار کر لی۔

بے شک ابراہیم رحم دل اور صبر کرنے والے تھے۔”

 

رَبِّ اغْفِرْ لِي وَلِوَالِدَيَّ وَلِمَنْ دَخَلَ بَيْتِيَ مُؤْمِنًا وَلِلْمُؤْمِنِينَ وَالْمُؤْمِنَاتِ وَلَا تَزِدِ الظَّالِمِينَ إِلَّا تَبَارًا

 

اے میرے رب مجھے اور میرے والدین کو اور جو میرے گھر میں مومن اور مومن مرد

اور مومن عورتوں کو بخش دے  اور ظالموں کو ہلاکت کے سوا نہ بڑھاؤ۔

سورہ نوح آیت 28

 

 نمبر 4 

 

 والدین کی بخشش کے لیے دعا 

 

رَبِّ ارْحَمْهُمَا كَمَا رَبَّيَانِي صَغِيرًا

’’اے میرے رب، ان پر رحم فرما جیسا کہ انہوں نے مجھے بچپن میں پالا ہے۔‘‘

سورہ اسراء آیت 24

 

 نمبر 5 

 

 نئے شہر میں داخل ہونے کے لیے نبی محمد کی دعا 

 

رَبِّ أَدْخِلْنِي مُدْخَلَ صِدْقٍ وَأَخْرِجْنِي مُخْرَجَ صِدْقٍ وَاجْعَلْ لِي مِنْ لَدُنْكَ سُلْطَانًا نَصِيرًا

اے میرے رب، مجھے ایک اچھے دروازے میں داخل کر اور صحیح راستہ سے

باہر نکال اور مجھے اپنے پاس سے ایک حمایتی اختیار عطا فرما۔

 

سورہ اسراء آیت 80 

You May Also Like: Four Duas For Life In Islam

 

You May Also Like: Important Four Authentic Duas

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.