خانہ کعبہ کے دروازے

خانہ کعبہ کے دروازے

Doors Of The Khana Kabah

 

یہ خانہ کعبہ کا مشرقی دروازہ ہے۔

اصل میں یہ زمینی سطح پر تھا لیکن اس وقت اٹھایا گیا

جب قریش نے کعبہ کی تعمیر نو کی۔

 

 پہلی بار دروازہ لگایا گیا تھا 

 

 

ابراہیم علیہ السلام نے خانہ کعبہ کی تعمیر کی۔

کنگ طوبہ کا دروازہ چوتھی صدی عیسوی کےآخر میں کنگ ٹببا نے لگایا تھا۔

کنگ طوبہ کا دروازہ لکڑی سے بنایا گیا تھا۔

کنگ ٹببا یمن کا بادشاہ تھا جس نے یہودیت اختیار کر لی تھی

 

 خانہ کعبہ کے دروازے  قریش کے زمانے میں  بنا ئے گئے تھے 

 

 

قریش نے مشرقی جانب کا دروازہ زمین سے اونچا کر دیا تاکہ لوگ اپنی

مرضی سے خانہ کعبہ میں داخل نہ ہوں۔

 

 خانہ کعبہ کے دروازے سلطان مراد کے دور میں بنا ئے گئے تھے 

 

 

 مکہ مکرمہ میں شدید بارش کی وجہ سے خانہ کعبہ کی مشرقی اور مغربی دروازے گر گئیں۔

خانہ کعبہ کو  1630 عیسوی میں عثمانی سلطان مراد  کے دوردوبارہ تعمیر کیا گیا۔

عثمانی سلطان مراد  نےنئے دروازوں کی تعمیر کے لیےمصری کاریگروں کی خدمات حاصل کیں۔

مصری کاریگروں نے دروازوں کو  چاندی  اور  بینیڈکٹ سونے سے لپیٹ دیا۔

اب ابوظہبی کے لوور میوزیم میں روڈز آف عربیہ نمائش کا حصہ ہے۔

 

 خانہ کعبہ کے دروازےشاہ خالد کے دور میں بنا ئے گئے تھے  

 

 

شاہ خالد نے 1977 میں دروازے کے نچلے حصے پر خراشیں دیکھی تو تبدیل کرنے کا حکم دیا۔

شاہ خالدکے جانشین شاہ فہد نے منصوبےکو اپنے دور حکومت میں مکمل کیا۔

خانہ کعبہ کے دروازے 2.5 سینٹی میٹر موٹےایلومینیم سے بنا ئے گئے ۔

 خانہ کعبہ کے دروازے کی اونچائی 3.1 میٹر تھی۔

خانہ کعبہ کے دروازے سونے اور چاندی کی پلیٹوں سے لیپت تھے۔

خانہ کعبہ کے  دروازے پر 280 کلو گرام  سونا لگایا گیا۔

 

 خانہ کعبہ کے دروازے پر نوشتہ  

 

خانہ کعبہ کے  دروازے پراللہ جل جلالہ محمد صلی اللہ علیہ وسلم لکھا ہوا ہے

اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے۔

سلامتی اور سلامتی کے ساتھ داخل ہوجاؤ” (سورہ حجر: 46)

اللہ تعالیٰ نے خانہ کعبہ کو حرمت والا گھر بنایا ہے اور ساتھ ہی

حرمت والے مہینوں کو بھی ایسا ذریعہ بنایا ہے جس سے

بنی نوع انسان کی (جسمانی اور روحانی سلامتی اور بھلائی) قائم رہتی ہے(سورہ مائدہ:97)

You Might Also Like:The cover of Kabah (Kiswah)

Leave a Reply

Your email address will not be published.