حضرت مریم علیہا السلام کی جائے پیدائش

حضرت مریم علیہا السلام کی جائے پیدائش

Birthplace of Hazrat Maryam (عليها السلام)

 

Birthplace of Hazrat Maryam (عليها السلام)

 

یہ سینٹ این کا چرچ ہے ایک رومن کیتھولک چرچ جو پرانے

شہر کے مسلم کوارٹر میں شیروں کے دروازے کے قریب واقع ہے۔

عیسائی ذرائع کے مطابق یہ چرچ اس جگہ پر بنایا گیا ہے جہاں حضرت عیسیٰ علیہ السلام

کی والدہ مریم علیہا السلام کی پیدائش ہوئی تھی چرچ کا نام ان کی

والدہ این (حنا) کے نام پر رکھا گیا ہے جو یہاں رہتی تھیں۔

ان کے والد کا نام عمران بن متھن تھا ان کی والدہ کا پورا نام حنا بنت فقد تھا۔

وہ دونوں بہت زیادہ دیندار تھے اور اللہ تعالیٰ کی نظر میں بلند مرتبہ رکھتے تھے۔

حنا بڑھاپے کو پہنچنے تک اولاد سے محروم رہی۔

ہوا یوں کہ ایک دفعہ وہ درخت کے سائے میں بیٹھی ہوئی تھی کہ

اس نے ایک پرندے کو اپنے چھوٹے بچے کو دودھ پلاتے دیکھا۔

وہ یہ منظر دیکھ کر دل ہلا کر رہ گئی اور اللہ تعالیٰ سے اپنے ایک بچے کے لیے دعا مانگتی رہی۔

اس نے عہد کیا کہ اگر اسے ایک تحفہ دیا جائے تو وہ اس بچے

کو بیت المقدس کی خدمات کے لیے پیش کرے گی۔

 

Birthplace of Hazrat Maryam (عليها السلام)

 

وہ حاملہ ہوگئی ان کے شوہرعمران ان کی پیدائش سے پہلے انتقال کر گئے تھے

لہذا مریم (علیہا السلام) ایک (یتیم) کے طور پر پیدا ہوئیں حنا نے بڑے ہونے

تک اس کی اچھی طرح دیکھ بھال کی اور اپنی قسم کو پورا کرنے

کے لیے اس نے اسے حرم میں پیش کیا۔

عام رواج یہ تھا کہ بیت المقدس کی خدمت میں صرف مردوں کو پیش کیا جاتا تھا

تاہم مریم علیہا السلام کو قبول کر لیا گیا۔ تمام نمازی اس کی نگہداشت کرنا چاہتے تھے

لیکن حضرت زکریا علیہ السلام کو اس کے ولی کے لیے چنا گیا کیونکہ وہ ان کے چچا تھے۔

 

Birthplace of Hazrat Maryam (عليها السلام)

 

چرچ کا موجودہ ڈھانچہ صلیبیوں نے 1140ء میں تعمیر کیا تھا۔ جب مسلمانوں نے 1189ء

میں یروشلم پر قبضہ کیا تو چرچ کو تباہ نہیں کیا گیا بلکہ صلاح الدین ایوبی کے ذریعہ مدرسہ

میں تبدیل کردیا گیا جسے المدرسہ الصالحیہ کہا جاتا ہے۔

اس کا نام مرکزی دروازے کے اوپر عربی تحریر میں ہے۔

 

You May Aslo Like: New Round Of Ukraine And Russia Talks Offer Glimmer Of Hope

Leave a Reply

Your email address will not be published.